دنیا بھر سے اہم خبریں

india toilet

بھارت سے خبر موصول ہوئی ہے کہ وہاں جنتا کو مودی نے چند بیت الخلا بنا کر دیے ہیں تو خوشی سے اس کا دماغ عرش پر پہنچ گیا ہے۔ بھارتی وزیراعظم نریندرامودی نے دعویٰ کیا تھا کہ وہ اپنے دورِ حکومت میں بھارت کے سو فیصد شہریوں کو عوامی بیت الخلا کی سہولت مہیا کریں گے اور کوئی بھی شہری اس مقصد کے لیے کھیتوں اور جھاڑیوں کا رخ نہیں کرے گا۔ بی جے پی کے اسی اہم تعمیراتی منصوبے پر بھارتی ناگرک ]شہری[ خوشی سے بے حال ہوئے جا رہے ہیں اور اس اہم بنیادی انسانی حق کے پانے پر وہ نوتعمیر شدہ بیت الخلاؤں کی آرتی اتار کر ، ناریل پھوڑ کر اور پوجا پاٹ کر کے ان کا افتتاح کر رہے ہیں۔

بھارت سے ہی خبر موصول ہوئی ہے کہ بھارتی فضائی کمپنی ’ایئر انڈیا‘ کے ایک مسافر بردار طیارے کو اٹلی کے شہر میلان کی جانب پرواز کرتے ہوئے دو گھنٹے کا وقت گزر چکا تھا جب طیارے میں ایک چوہا نظر آنے کی بناء پر طیارے کا رُخ واپس نئی دہلی کی جانب موڑ دیا گیا۔ بعد میں چوہا تلاش کے باوجود نہیں مل سکا ہے اور امیگریشن والے پریشان بیٹھے ہیں کہ چوہا بغیر پاسپورٹ اور ویزے کے کیسے اٹلی جانے والے جہاز میں سوار ہو گیا تھا۔

جاپان سے اطلاع آئی ہے کہ وہاں بابے بگڑ گئے ہیں۔ جاپان میں گذشتہ چھ ماہ کے دوران جرائم کی دوڑ میں عمر رسیدہ افراد نے نوجوانوں کو مات دے دی ہے۔ یہ پہلا موقع ہے کہ 65 سال سے زیادہ عمر کے افراد کی جانب سے کیے گئے جرائم کی تعداد نوجوانوں کے جرائم سے زیادہ ہے۔ واضح رہے کہ ملک کی تقریباً 12 کروڑ آبادی میں سے ایک چوتھائی افراد اب ریٹائرمنٹ کی عمر کو پہنچنے والے ہیں لیکن جاپان کی حکومت نے تنبیہ کی ہے کہ آنے والی دہائیوں میں بابوں کی آبادی کا یہ تناسب اور بھی بڑھ سکتا ہے اور جرائم قابو سے باہر ہو سکتے ہیں۔

پیرس حملے کے بعد یورپ اور امریکہ میں مسلمان خوفزدہ ہیں۔ اس صورت حال کو دیکھتے ہوئے امریکہ بھر میں “شیطانی مندر” سے تعلق رکھنے والے شیطان کے پجاریوں نے انسانی ہمدردی کی بنیاد پر یہ پیشکش کی ہے کہ اگر کسی مسلمان کو گھر سے باہر نکلتے ہوئے ڈر لگ رہا ہے تو وہ شیطان کے پجاریوں کو کال کریں، اور وہ اس کی حفاظت کے لیے سادہ لباس میں ملبوس ایک دو مسٹنڈے بھیج دیں گے جو اسے شاپنگ وغیرہ کروا لائیں گے۔ اور یہ سروس قطعاً مفت ہو گی۔ شیطانی نمائندے کرٹ لینڈزمین نے بیان دیا ہے کہ “ہم اپنی کمیونٹی کی خدمت کرنے پر خوش ہیں۔ بدقسمتی سے ابھی تک کسی نے ہماری آفر سے استفادہ نہیں کیا ہے۔ ہماری رائے ہے کہ ہماری اپنی کمیونٹی میں کئی سال سے امن سکون سے رہنے والے مسلمانوں کے مقابلے میں بندوق لہراتے ہوئے انتہاپسند مسیحی، کہیں بڑا خطرہ ہیں”۔ کئی مسلمانوں نے اس پیشکش پر شکریے کے الفاظ کہے ہیں۔

نیوزی لینڈ کے ایک چڑیا گھر نے اپنے ہاں ایک ایسے شخص کے داخلے پر پابندی عائد کر دی ہے، جو جنگلی حیات کے اس پارک میں شور مچاتا اور اپنا سینا پیٹ پیٹ کر بندروں کی نقل اتارتا تھا۔ نیوزی لینڈ کے اورانا وائلڈ لائف پارک کی انتظامیہ نے کہا ہے کہ چڑیا گھر میں اس شخص کے داخل ہو کر بندروں کی نقل اتارنے والی حرکتوں سے وہاں کے گوریلا سخت تنگ تھے۔ اینڈریو رائٹ، جو خود کو جادوگر اور توانائی کے ذریعے علاج کرنے والا بتاتا ہے، پارک میں داخل ہو کر بندروں اور گوریلا کی طرح اپنے سینے پر زور زور سے ہاتھ مارتا تھا اور شور مچاتا تھا، اس پر رائٹ کی ان حرکتوں کی وجہ سے بگ بوائے نامی گوریلا انتہائی مشتعل ہو گیا تھا۔ بگ بوائے نے، جو 190 کلوگرام وزنی ہے، شیشے کے پنجرے کو زور زور سے کندھے مار کر توڑنے کی کوشش کی۔ دوسری جانب پابندی کے شکار رائٹ نے کہا ہے کہ ان پر پابندی درست نہیں اور گوریلا نے ان کی حرکتوں کا مثبت جواب دیا تھا۔

صدر مصر عبد الفتاح السیسی کی انتظامیہ نے مشہور جامعہ الازھر کے عالمائے دین کو غیر متوقع ھدایت دی ھے۔ مصری حکام نے مقامی ٹورسٹ بزنس کو بچانے کے مقصد سے جامعہ الازھر کے عالمائے دین کو غیر ملکی سیاحوں کا خیر مقدم کرنے کیلئے شرم الشیخ کے ائرپورٹ بھیج دیا ھے۔ ایک سعودی بلاگر نے مذاق کے طور پر تجویز پیش کی کہ حکام الازھر کے عالمائے دین کو بھیج دیں تاکہ وہ ریتیلے سمندری ساحِل پر آرام کرنے والے سیاحوں کیلئے خطبۂ جمعہ پڑھیں۔ شاید صدر السیسی، پاکستان سے متاثر ہو گئے ہیں جہاں مولانا فضل الرحمان کے برادر خورد مولانا عطا الرحمان صاحب کو سیر و سیاحت کی وزارت کا قلمدان سونپا گیا تھا۔

زمبابوے سے اطلاع موصول ہوئی ہے کہ ایک یونیورسٹی کے نائب رجسٹرار تاکاویرا نے یونیورسٹی کے لیے شرمندگی کا سامان پیدا کیا کیونکہ انھوں نے تقسیم اسناد کی تقریب کے لیے 92 سالہ صدر موگابے کے لیے ایسی ٹوپی بھجوائی جو ان کے سر کے لیے بہت چھوٹی تھی۔ کہا جا رہا ہے کہ صدر کے دفتر سے اس بارے میں کوئی شکایت نہیں کی گئی تھی۔ الطلاع یہ ہے کہ یہ فیصلہ یونیورسٹی انتظامیہ کی جانب سے صدر موگابے کا ممکنہ غصہ ٹھنڈا کرنے کے لیے از خود کیا گیا ہے۔ نامہ نگاروں کے مطابق گذشتہ برس کی تقریب میں بھی صدر کے خطاب کے دوران محسوس کیا گیا کہ گریجوایشن کیپ صدر کے سر پر پوری نہیں آئی تھی۔

ادھر سعودی عرب سے اطلاع موصول ہوئی ہے کہ وہاں پہلی بار خواتین کو ملکی معاملات چلانے کے لیے الیکشن میں حصہ لینے کی اجازت دے دی گئی ہے اور سعودی الیکٹورل کمیشن کے مطابق 284 کونسلز کے لیے سات سو امیدوار میدان میں اتر رہے ہیں، جن میں نو سوخواتین شامل ہیں۔ واضح رہے کہ سعودی خواتین کو موٹر کار، بلکہ اونٹ تک چلانے کی اجازت نہیں ہے لیکن ان کو ملک چلانے کی اجازت ملنا خوش آئند اقدام ہے۔

بدقسمتی سے یہ ساری خبریں سچی ہیں۔

عدنان خان کاکڑ

عدنان خان کاکڑ پیشے کے لحاظ سے ایک آئی ٹی کنسلٹنٹ ہیں۔ وہ بنیادی طور پر خود کو ایک طنز و مزاح نگار کے طور پر دیکھتے ہیں، لیکن سنجیدہ تجزیات و تبصروں پر بھی ہاتھ صاف کرتے رہتے ہیں۔ ان کی تحریریں دنیا پاکستان اور سپتنک روس کی ویب سائٹس پر بھی شائع ہوتی ہیں۔

Leave a Reply

Your email address will not be published.