کر برا تو ہو برا، انت برے کا برا

Spread the love

کر برا تو ہو برا، انت برے کا برا

tribe-savages-6850034نفسیات دان لیونارڈ زونین اپنی کتاب کونٹیکٹ، دا فرسٹ فور منٹس میں  بیمبا کہلائے جانے والے کچھ افریقی لوگوں  کی ایک دلچسپ روایت کے بارے میں بتاتے ہیں۔

جب کوئی شخص کوئی غلط یا برا کام کرتا ہے، تو اسے بستی کے بیچ میں لے جایا جاتا ہے۔ اب یہ غریب غربا اور تفریح کو ترسے ہوئے  پسماندہ سے لوگ ہیں جن کے پاس نائٹ کلب، ٹی وی وغیرہ تو کیا، بجلی تک نہیں ہے۔ تفریح اور وقت گزاری کے لیے  سب لوگ اس کے گرد اکٹھے ہوجاتے ہیں تاکہ اسے مل کر سدھار سکیں۔ اب کیونکہ یہ اچھے اور نیک لوگ ہیں، اور ایسے لوگ کوئی جسمانی ظلم تشدد نہیں کر سکتے، لیکن اس بندے کو ٹھیک بھی کرنا ہوتا ہے۔ تو پھر اس کا حل انہوں نے بہت نیک اور عبرتناک نکالا ہے۔   ہر شخص باری باری سامنے آتا ہے اور گناہ گار کے بارے میں اپنی یادداشت سے کوئی اچھا واقعہ جس سے اس کی خوبی اور اچھائی ظاہر ہوتی ہو، سناتا ہے۔ کئی گھنٹے یہ سب سن سن کر اس بندے کو یقین ہو جاتا ہے کہ میں واقعی کوئی بڑا نیک بندہ یا پہنچا ہوا پیر فقیر ہوں جو یہ سارے میرے مرید ہوئے جا رہے ہیں۔

کسی نامعلوم وجہ سے بیمبا لوگوں کا خیال ہے کہ ہر انسان دنیا میں نیک ہی پیدا ہوتا ہے جو کہ دوسروں کے لیے حفاظت ، محبت، امن اور خوشی کے سوا کچھ اور نہیں چاہتا۔ لیکن کبھی کبھار ان چیزوں کی جستجو میں آدمی غلطیاں کر بیٹھتا ہے۔ یہ لوگ ان غلطیوں کو مدد کے لیے ایک پکار کی حیثیت سے دیکھت ہیں۔ اگر ان لوگوں کا ایک چکر پاکستان کا لگ جائے تو غالباً ان کے نظریات میں ایک واضح تبدیلی ضرور آئے گی۔

بہرحال، اس پکار کو وہ کچھ زیادہ ہی سنجیدگی سے لے لیتے ہیں۔ وہ سب اس گرتے شخص کو تھامنے کے لیے اس کے گرد جمع ہو جاتے ہیں، تاکہ اس کو اس کی اصل فطرت کے ساتھ دوبارہ جوڑ سکیں۔ اسے یاد کراسکیں کہ اس کی اصلیت کیا ہے۔ اسے اتنے بھاشن دیتے ہیں اور اس کی اتنی تعریفیں کرتے ہیں کہ شروع کے دو چار گھنٹے  وہ پھول کر کپا ہو جاتا ہے۔ لیکن معاملے کو مزید پکا کرنے کے لیے اسے اس کی نیکیاں گنوائی جاتی رہتی ہیں حتیٰ کہ وہ اتنا آوازار ہوتا ہے کہ توبہ توبہ کر اٹھتا ہے کہ کہاں پھنس گیا ہوں۔ اسے اچھی طرح یاد آجاتا ہے کہ وہ سچ کیا ہے جس سے وہ عارضی طور پر ہٹ گیا تھا، اور وہ سچ صرف یہ ہے ہ “میں بہت نیک ہوں”۔

Comments

comments

Leave a Reply

Your email address will not be published.